مسیح کی دوسری آمد

______________________________________________________________

______________________________________________________________

بہت سے جھوٹے نبی اُٹھیں گے اور بہتوں کو دھوکہ دیں گے۔ اور بدکاری کے بڑھنے سے بہت سے لوگوں کی محبت ٹھنڈی پڑ جائے گی۔ لیکن جو آخر تک محفوظ رہے گا وہ نجات پائے گا۔ اور بادشاہی کی اِس خوشخبری کی منادی پوری دنیا میں تمام قوموں کے لیے گواہی کے طور پر کی جائے گی، اور اُس کے بعد انجام آئے گا۔ (متی 24:11-14)

عصری ارتداد برائیوں میں اضافے کی وجہ سے ہے۔

انجیر کے درخت سے سبق سیکھو۔ جب اس کی شاخ نرم ہو جاتی ہے اور پتے پھوٹ پڑتے ہیں تو تمہیں معلوم ہوتا ہے کہ موسم گرما قریب ہے۔ (متی 24:32)

مسیح نے انجیر کے درخت کی نشوونما کو اپنی دوسری آمد کے قریب ہونے والے واقعات کی تشبیہ کے طور پر استعمال کیا۔

’’لیکن اُس دن اور گھڑی کے بارے میں کوئی نہیں جانتا، نہ آسمان کے فرشتے، نہ بیٹا، سوائے باپ کے۔‘‘ (متی 24:36)

______________________________________________________________

This entry was posted in اردو and tagged . Bookmark the permalink.