حکمت: ایمان کا کمال

________________________________________________________________

حکمت روح کو خدا کے غور و فکر میں روح القدس کے لئے جوابدہ بناتی ہے تاکہ وہ اپنے خیالات کو اپنی تخلیق کا فیصلہ کرنے کے لئے استعمال کرے۔ حکمت خدا کے ہم آہنگی اور خوف کو اثر انداز کرتی ہے اور ہمارے معیارات کو خدا کے مطابق بناتی ہے۔ ہمیں مسیح کے غیبی جسم کی خدمت کے لئے حکمت کی خواہش کرنی چاہئے جیسا کہ روح القدس چاہتا ہے۔

“ہمیں دنیا کی روح نہیں ملی بلکہ وہ روح ملی ہے جو خدا کی طرف سے ہے تاکہ ہم خدا کی طرف سے ہمیں دی گئی چیزوں کو آزادانہ طور پر سمجھ سکیں۔ اور ہم ان کے بارے میں انسانی دانش مندی سے سکھائے گئے الفاظ سے نہیں بلکہ روح کے سکھائے ہوئے الفاظ کے ساتھ بات کرتے ہیں اور روحانی حقائق کو روحانی اصطلاحات میں بیان کرتے ہیں۔ ” (1 کرنتھیوں 2:12-13)

حکمت کی حرمت روح القدس کے ان سات تحفوں میں سے ایک ہے جو فضل کی حالت میں تمام عیسائیوں کے لیے دستیاب ہیں۔ یہ تحفہ سکریمنٹس کے ذریعے دیا جاتا ہے، خاص طور پر تصدیق کے ذریعے۔ حکمت کے ذریعے ہم زندگی کے مسائل کا سامنا کرتے ہیں اور اپنے پڑوسیوں کے ساتھ خیرات اور صبر کا برتاؤ کرتے ہیں۔ ہم مطالعہ یا تجربے کے ذریعے تحفہ حاصل نہیں کرسکتے کیونکہ حکمت خدائی علم کا اطلاق ہے۔

حکمت کا ایک لفظ نبوی مستقبل، اس کی تکمیل کے لئے خدا کے ذرائع اور علم کو موثر طریقے سے استعمال کرنے کی خدائی سمت پر مشتمل ہوسکتا ہے۔  ہم نماز کے ذریعے روح القدس سے حکمت حاصل کر سکتے ہیں۔

پس میں بھی خداوند یسوع پر آپ کے ایمان اور تمام مقدسلوگوں سے آپ کی محبت کا سن کر آپ کا شکر ادا کرنا بند نہ کروں، آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد کروں کہ ہمارے خداوند یسوع مسیح کا خدا جو جلال کا باپ ہے، آپ کو حکمت اور وحی کا جذبہ عطا کرے جس کے نتیجے میں اس کے بارے میں علم حاصل ہو۔ (افسیائی 1:15-17)

مضمون کرشماتی حکمت کی ترقی نجات کے لئے مقدس حکمت کے اضافے کو ظاہر کرتا ہے، کرشماتی حکمت کو مسیح کے غیبی جسم کی خدمت کرنے کے لئے، اور مضمون ساؤل کی نظر بحالی علم اور حکمت کے درمیان کرشماتی تعامل کی وضاحت کرتا ہے. روح القدس ہمیں اپنی مرضی کے مطابق حکمت عطا کرتا ہے تاکہ وہ اپنے مافوق الفطرت منصوبوں اور مقاصد کو پورا کر سکے۔

________________________________________________________________

This entry was posted in اردو and tagged . Bookmark the permalink.